دولت اور رزق کی بر سات دیکھنا چاہتے ہو

دولت اور رزق کی بر سات دیکھنا چاہتے ہو تو یہ وظیفہ کر لو دیکھتے ہی دیکھتے امیر ہو جاؤ گے زندگی بھر اور کسی عمل کی ضرورت نہ پڑ ے گی۔ حضرت علی کا فر ما ن ہے: خداوند عالم کو جب اپنے کسی بندے کی اصلاح مطلوب ہوتی ہے تو اسے کم بو لنے ، کم کھانے اور کم سونے کا الہام فر ما تا “آج میں آپ کی نظروں کے سامنے ایک با کمال وظیفہ پیش کر نے جا رہا ہوں۔ جس کو پڑھتے ہی دولت اور رزق کی طو فانی بر سات ہو نا شروع ہو جا ئے گی۔ ہمارے ایسے دوست احباب جو مالی تنگی کا شکار ہیں یا کسی نے جادو ٹونا کر وا دیا ہے ۔

او ر ان کے رزق و دولت میں سے بر کت اُٹھ گئی ہے اور تنگ دستی کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے۔ توایسے افراد کے لیے آج کا یہ وظیفہ ایک اُمید کی کرن ثابت ہو گا۔ آپ اللہ کی ذات پر پخٹہ اور کامل یقین رکھتے ہوئے اس وظیفے پر عمل کر یں۔ اور دولت و رزق کی بر سات ہوتے دیکھیں۔ عمل اور ضروری ہدایات: یہ وظیفہ آپ نے نمازِ مغریب کے بعد کر نا ہے اور سورۃ بقرہ کی آخری دو آیات کو تین مرتبہ پڑ ھنا ہے اور دو مرتبہ درودِ پاک پڑھنا ہے آخر میں اللہ پاک سے دعا مانگنی ہے اس عمل کو نو روز تک کر نا ہے۔ انشاء اللہ دولت اور رزق کی بر سات سے آپ کا گھر بھر جائے گا۔ دیکھتے دیکھتے آپ اتنے امیر ہو جاؤ گے کہ لوگ آپ کی قسمت پر رشک کریں گے۔

اللہ آپ کے رزق و دولت میں سے بے بر کتی اُٹھا لے گا۔ اگر آپ اپنے لیے دعا مانگنے سے پہلے دوسروں کے لیے دعا مانگیں گے تو ان شاء اللہ آپ کی دعا ضرور قبول ہو گی۔ وظیفہ کر نے سے پہلے پہلے کچھ نہ کچھ صدقہ و خیرات کر لیا کریں۔ ہر وظیفہ انسان کی بہتری کے لیے ہی ہوتا ہے اور اس وظیفے کے استعمال سے انسان ہر طرح کی مالی مشکلات سے چھٹکارا حاصل کر سکتا ہے۔ جیسا کہ میں نے کہا ہے کہ یہ ایسا مجرب وظیفہ ہے کہ جس کو کر نے سے انسان دیکھتے ہی دیکھتے امیر ہو جاتا ہے اور اپنی خواہشات کو پورا کرنے لگتا ہے۔ آج کل کے دور میں پیسہ ہر ایک کی ضرورت بن چکا ہے۔ اور ہر ایک انسان ہی یہی چاہتا ہے کہ اس کے پاس زیادہ سے زیادہ دولت ہو تا کہ اس کو زندگی میں کسی بھی قسم کی پریشانی نہ ہو۔ کیو نکہ انسانی زندگی کی ہر پریشانی پیسے سے ہی دور ہو سکتی ہے۔ تو یہ ایک ایسا مجرب وظیفہ ہے کہ جس کے عمل کرنے پر ہر قسم کی مالی مشکلات کا حل نکل سکتا ہے

About admin

Check Also

بو علی سینا اور لڑکی

کہتے ہیں کہ قدیم زمانے میں ایک رئیس کی بیٹی گھوڑا سواری کے دوران گھو …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *